لاہور:افغانستان میں کسی مداخلت کے حامی نہیں، مریم نواز

لاہور:(مہر محمد عابد)مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز نے کہا ہے کہ افغانستان میں کسی مداخلت کے حامی نہیں ہیں، افغانستان کو قریبی ہمسایہ سمجھتے ہیں اور افغانستان کی خودمختاری کا احترام کرتے ہیں۔مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز سے امریکی ناظم الامور اینجیلا ایگلر نے ملاقات کی، مریم نواز نے جاتی امرا میں اینجلا ایگلر کا استقبال کیا، ملاقات میں پاک امریکا تعلقات، عالمی و علاقائی امن و سلامتی کی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا۔اس موقع پر مریم نواز کا کہنا تھا کہ افغان عوام، خواتین، بچوں کیلئے امن، ترقی، خوش حالی کے خواہاں ہیں، افغانستان کے عوام کی انسانی مدد کیلئے پوری دنیا کو کردار ادا کرنا ہوگا، ایسی سازگار فضاء ضروری ہے جس میں افغان مہاجرین گھروں کو لوٹ سکیں۔انہوں نے کہا کہ نون لیگ جمہوری ترقی اور سلامتی پر مبنی ایجنڈے کے فروغ پر یقین رکھتی ہے، جمہوریت، جمہوری اصولوں کی نشوونما اور مضبوطی چاہتے ہیں، دنیا بھر کے جمہوریت پسندوں کے ساتھ شریک کار ہونا چاہتے ہیں۔

ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ ن لیگ حکومت نے تمام ممالک سے خوشگوار تعلقات کو فروغ دیا تھا، پاکستان نے دہشت گردی کے خلاف عظیم قربانیاں دی ہیں۔انہوں نے کہا کہ نواز شریف نے دہشت گردی کے خلاف قومی بیانیہ تشکیل دیا، انہوں نے پوری قوم کو دہشت گردی کے خلاف متحد کیا۔مریم نواز نے پاکستان کے عوام کی طرف سے خیرسگالی کا پیغام دیتے ہوئے امریکی صدر جو بائیڈن اور ان کی حکومت کو مبارک دی۔امریکی ناظم الامور نے انسداد دہشت گردی کیلئے پاکستان کی قربانیوں کا اعتراف کیا۔ امریکی وفد نے مریم نواز کی خواتین، بچوں، ذرائع ابلاغ اور انسانی حقوق کے لئے جدوجہد کو سراہا۔ملاقات میں امریکی ناظم الامور اینجلا ایگلر کے ہمراہ امریکی قونصل جنرل ولیم میکانول اور پولیٹیکل آفیسر خدیجہ کورے تھیں جبکہ نون لیگ کے شاہد خاقان عباسی، احسن اقبال، پرویز رشید، خرم دستگیر، مریم اورنگزیب، طارق فاطمی اور بلال کیانی بھی موجود تھے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں