اسلام آباد:امریکا سے فضائی حدود کے استعمال پر کوئی معاہدہ نہیں ہو رہا: وزارتِ خارجہ

اسلام آباد:(صاف بات) وزارتِ خارجہ کے ترجمان کا کہنا ہے کہ امریکا کے ساتھ پاکستان کی فضائی حدود استعمال کرنے کے حوالے سے کوئی معاہدہ نہیں ہو رہا۔ترجمان وزارتِ خارجہ کا جاری کیئے گئے بیان میں کہنا ہے کہ پاکستان اور امریکا میں علاقائی سیکیورٹی اور انسدادِ دہشت گردی پر تعاون چلا آ رہا ہے۔دفترِ خارجہ کے ترجمان کے مطابق پاکستان اور امریکا کے درمیان باقاعدہ مشاورت جاری رہتی ہے، پاکستان نے امریکا کو افغانستان میں کارروائیوں کے لیے ایئر کوریڈور دینے کے معاہدے کی تجدید نہیں کی۔ترجمان دفترِ خارجہ نے مزید کہا ہے کہ افغانستان میں آپریشنز کے لیے فضائی حدود کے استعمال کے معاہدے کو باقاعدہ شکل دینے کی خبریں درست نہیں۔دفترِ خارجہ کے ترجمان کا یہ بھی کہنا ہے کہ پاکستان اور امریکا کا علاقائی سلامتی اور انسدادِ دہشت گردی پر دیرینہ تعاون ہے، پاکستان اور امریکا باقاعدہ مشاورت میں مصروف ہیں۔واضح رہے کہ اس سے قبل امریکا کے نشریاتی ادارے کی جانب سے دعویٰ کیا گیا تھا کہ افغانستان میں فوجی آپریشن کے لیے پاکستانی فضائی حدود کے استعمال پر امریکا اور پاکستان معاہدے کے قریب پہنچ گئے۔

امریکی نشریاتی ادارے کا کہنا تھا کہ جو بائیڈن انتظامیہ نے امریکی ارکانِ کانگریس کو پاکستان سے کیئے گئے سمجھوتے سے آگاہ کر دیا۔امریکا کے نشریاتی ادارے کا کہنا تھا کہ پاکستان نے فضائی حدود کے استعمال کے بدلے انسدادِ دہشت گردی کے لیے امداد کی فراہمی اور بھارت سے تعلقات میں بہتری کے لیے مدد کی خواہش ظاہر کی ہے۔امریکی نشریاتی ادارے نے بتایا تھا کہ امریکی ارکانِ کانگریس کو پاکستان سے ہونے والے سمجھوتے سے جمعے کی صبح آگاہ کیا گیا۔امریکا کے نشریاتی ادارے کا مزید کہنا تھا کہ سمجھوتے کو حتمی شکل دینے کے لیے امریکا اور پاکستان کے مذاکرات جاری ہیں۔امریکی نشریاتی ادارے کا یہ بھی کہنا تھا کہ سمجھوتے کو حتمی شکل نہیں دی گئی، اس میں تبدیلی بھی ہو سکتی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں