سابق وزیراعظم میاں نواز شریف کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا معاملہ ڈیڈ لاک برقرار, ن لیگ کا شورٹی بانڈز جمع کرانے سے صاف انکار

 اسلام آباد(صاف بات) سابق وزیراعظم میاں نواز شریف کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا معاملہ پر ذیلی کمیٹی کے اجلاس میں ڈیڈلاک برقرار، ن لیگ نے زر ضمانت جمع کرانے سے صاف انکار کردیا۔

کمیٹی نے نیب کو آج صبح دس بجے تک جواب جمع کرانے کی ہدایت کر دی، کمیٹی اپنی سفارشات مرتب کرکے فیصلے سے آج ہی آگاہ کرے گی۔ بانڈ دينے سے انکار ذيلی کميٹی ميں عطا تارڑ نے کیا، ن لیگ کے رہنما عطا تارڈ کا کہنا تھا کہ عدالتوں میں سیکیورٹی بانڈ جمع کرا چکے ہیں، مزید کسی کو سیکیورٹی جمع کرانے کی ضرورت نہیں ہے۔

دوسری جانب وزیرقانون فروغ نسیم نے میڈیا سے گفتگو میں کہا کہ کابینہ کی ذیلی کمیٹی کاآج تفصیلی سیشن ہوا تاہم کابینہ کی ذیلی کمیٹی کافیصلہ محفوظ کرلیاگیا ہے۔ وزیرقانون کا کہنا تھا کہ فیصلہ کب سنایا جائے گا ابھی طے نہیں ہوا،فیصلے سے وفاقی کابینہ کو آگاہ کریں گے۔

انہوں نے کہا کہ نوازشریف کی مرضی ہےوہ کیافیصلہ کرتےہیں، نوازشریف کے فیصلے پرکوئی بات نہیں کروں گا، ہمارافیصلہ کسی کی رضامندی پرمنحصرنہیں۔ فروغ نسیم کا مزید کہنا تھا کہ پہلے دن کہا تھا میرٹ کے مطابق فیصلہ کروں گا، فائنل فیصلہ وفاقی کابینہ کرے گی، وفاقی کابینہ کواختیارہےوہ ہمارافیصلہ مانے یا نہیں۔

اس سے قبل حکومت نے نواز شريف کو علاج کيلئے بیرون ملک سفر کی غير مشروط اجازت دينے سے انکار کردیا، شریف خاندان کے سامنے ضمانتی بانڈز، عدالت سے این او سی سمیت مختلف شرائط رکھ دی گئیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں