اسلام آباد: جس ادارے پر ملک چل رہا ہے اس کی تضحیک کریں گے تو ردعمل ہوگا: شیخ رشید

اسلام آباد: (صاف بات)جس ادارے کے بل بوطے پر ملک چل رہا ہے اس کی تضحیک کریں گے تو ردعمل ہوگا: شیخ رشید

نجی ٹی وی سے گفتگو میں شیخ رشید کا کہنا تھا کہ چوروں اور لٹیروں کی ضمانتیں ہورہی ہیں لیکن ملک کی خدمت کرنے والے کو سزائے موت سنائی جارہی ہے، یہ باتیں آسانی سے ہضم ہونے والی نہیں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ سب سے حساس ادارہ جس کے سر پر ملک چل رہا ہے، اس کی تضحیک کریں گے تو وہاں ری ایکشن تو ہوگا۔ شیخ رشید کا کہنا تھا کہ اپوزیشن والے سارے جنرل ہیڈ کوارٹرز (جی ایچ کیو) کے گیٹ نمبر 4 کی پیدوار ہیں اور جی ایچ کیو کی نرسری میں بڑے ہوئے، ان کی کوئی شناخت نہیں ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ نوازشریف کوکون جانتا تھا؟ جی ایچ کیوکےگیٹ 4 سے کال پر وزیراعظم بنے، کون آصف زرداری کو جانتا تھا جو ایک شادی کی بنیاد پرسیاست دان بنے، ان چوروں اور لٹیروں کے لئے ضرور کوئی نئی راہ نکلے گی۔ وفاقی وزیر شیخ رشید کا کہنا تھا کہ فوج نے 3 بار آئین کو بچائے رکھا،اب بھی امید ہے آئین کو کوئی خطرہ نہیں۔

علاوہ ازیں وفاقی وزیر ریلوے نے کہا کہ پرویز مشرف کے فیصلے پر فوج میں غم غصہ پایا گیا ہے، فوج نے پرویزمشرف سے متعلق فیصلے کو قبول نہیں کیا، بعض لوگ فوج اور عوامی حکومت کو مل کر بیٹھے دیکھنا نہیں چاہتے۔ واضح رہے کہ اسلام آباد کی خصوصی عدالت نے سابق صدر جنرل پرویز مشرف کو سنگین غداری کیس میں سزائے موت کا حکم سنایا ہے۔مختصر فیصلے میں کہا گیا ہے کہ پرویز مشرف نے 3 نومبر 2007 کو آئین پامال کیا اور ان پر آئین کے آرٹیکل 6 کو توڑنے کا جرم ثابت ہوتا ہے۔فیصلے کے مطابق پرویز مشرف پر آئین توڑنے، ججز کو نظر بند کرنے، آئین میں غیر قانونی ترامیم، بطور آرمی چیف آئین معطل کرنے اور غیر آئینی پی سی او جاری کرنے کے آئین شکنی کے جرائم ثابت ہوئے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں