نئی دہلی:بھارت میں متنازع قانون کیخلاف مظاہرے، پولیس کی فائرنگ سے مزید 9 افراد ہلاک

نئی دہلی:(صاف بات)بھارت میں متنازع قانون کیخلاف مظاہرے، پولیس کی فائرنگ سے مزید 9 افراد ہلاک

بھارتی میڈیا کے مطابق متنازع شہریت بل کے معاملے پر احتجاج کی وجہ سے مارے جانے والوں کی تعداد 17ہو گئی ہے۔میڈیا رپوٹس کے مطابق میرٹھ میں 3، بجنور میں 2، ورانسی، فیروز آباد،کانپور اور سنبھل میں 4 مظاہرین کو بھارتی پولیس نے گولیاں مار کر ہلاک کیا، متعدد افراد زخمی بھی ہوئے۔چند روز قبل لکھنو میں ایک اور مینگلور میں 2 افراد کو گولی ماری گئی تھی۔ متنازع شہریت بل پر احتجاج کے دوران آسام میں اب تک 5 افرادکو ہلاک کیاجا چکا ہے۔

بھارت میں شہریت کے متنازع قانون کے خلاف ہونے والے مظاہروں میں شریک 4 ہزار سے زائد افراد کو گرفتار بھی کیا جاچکا ہے۔دوسری جانب بھارت کی حکمران جماعت بی جے پی سے تعلق رکھنے والے کرناٹکا کے ہندو انتہا پسند وزیر سیاحت سی ٹی روی نے بھارت میں مسلمانوں کی نسل کشی کی دھمکی بھی دیدی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں