لاہور: انڈس واٹر کمیشن کے سرکاری فنڈز میں خود برد پر ایڈیشنل کمشنر شیراز میمن کو نوکری سے برطرف کر دیا گیا۔

لاہور: انڈس واٹر کمیشن کے سرکاری فنڈز میں خود برد پر ایڈیشنل کمشنر شیراز میمن کو نوکری سے برطرف کر دیا گیا۔

ذرائع انڈس واٹر کمیشن کے مطابق شیراز میمن نے مبینہ طور پر ڈیڑھ کروڑ روپے کی رقم اپنے اکاؤنٹ میں جمع کروائی اور کرپشن کے مبینہ الزام پر انہیں جبری طور پر نوکری سے ریٹائر کر دیا گیا ہے۔جیو نیوز سے گفتگو میں انڈس واٹر کمشنر مہر علی شاہ نے اس بات کی تصدیق کی کہ وزیراعظم نے سرکاری فنڈز کی خرد برد کی تحقیقات کے لیے کمیٹی تشکیل دی تھی، الزامات ثابت ہونے پر کمیٹی نے شیراز میمن کو ملازمت سے فارغ کرنے کی سفارش کی۔مہر علی شاہ نے بتایا کہ شیراز میمن کو ملازمت سے فارغ کرنے کا باقاعدہ نوٹیفکیشن جاری کر دیا گیا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں