لاہور: راناثناء کی درخواست ضمانت پرفیصلہ آج سنایاجائےگا

لاہور: (صاف بات)راناثناء کی درخواست ضمانت پرفیصلہ آج سنایاجائےگا۔

لاہورہائيکورٹ نے رانا ثناءاللہ کی دائرکردہ درخواست ضمانت پرگزشتہ روز وکلاء کے دلائل سننے کے بعد فيصلہ محفوظ کیا تھا۔گزشتہ روز کی سماعت میں وکلاء نےدلائل مکمل کیے تھے۔ دوران سماعت پراسيکيوٹرکاکہنا تھا کہ اینٹی نارکوٹکس فورس نےرانا ثناء کی گاڑی سےمنشيات برآمد کی، ان کیخلاف سیاسی بنیاد پرکیس بنانے کا الزام سراسرغلط ہے۔وکيل صفائی اعظم نذیر تارڑ نےموقف اپنايا کہ کيس بنانےکے ليے رانا ثناءاللہ کی سرکاری سیکیورٹی 13 روز پہلے واپس لی گئی۔ گاڑی سےہیروئن برآمدہوئي تھی تواس کی فوٹیج کيوں نہيں بنائی گئی۔ منشيات برآمد ہونے پراس کا ميموبنتا ہے ليکن رانا ثنا اللہ کيس ميں تھانےميں موجود ہيروئن کا نمونہ ٹيسٹ لياگيا۔سماعت کے بعد عدالت کے باہررانا ثنا اللہ کی اہليہ کا کہنا تھا کہ اللہ کے بعدعدالت پربھروسہ ہے، مایوس نہیں ہوں ، کيس کا فيصلہ رانا ثناء کےحق ميں آئے گا۔یاد رہے کہ مسلم لیگ ن پنجاب کے صدر رانا ثناء اللہ کویکم جولائی 2019 کو اے این ایف لاہور نے موٹروے سے گرفتارکیا تھا۔اے این ایف کے مطابق رانا ثناء اللہ کی ذاتی گاڑی سے بھاری مقدار میں منشیات برآمد گی پر انہیں گرفتار کیا گیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں