اسلام آباد ہائی کورٹ کا عام سائلین کے لئے اہم فیصلہ

نواز شریف کی ہفتے کے روز درخواست ضمانت پر سماعت کے بعد اسلام آباد ہائیکورٹ نے فوری نوعیت کے کیسز میں عام سائلین  کے دروازے کھول دئیے ہیں۔ سائلین چھٹی کے روز بھی عدالت سے رجوع کرسکیں گے۔

اسلام آباد ہائی کورٹ کے ڈپٹی رجسٹرار جوڈیشل نے نوٹی فکیشن جاری کردیا ہے۔ نوٹی فکیشن کے تحت مجاز افسران دفتری اوقات کے بعد بھی عام سائلین کی سہولت کے لیے دستیاب ہونگے، ہنگامی صورت میں ایڈیشنل رجسٹرار نوٹیفکیشن پر دیے گئے نمبر پر ہروقت دستیاب ہونگے۔ اس کے علاوہ عام سائلین کے لیے دفتری اوقات کے علاوہ بھی ایمرجنسی کیسزسنے جائیں گے۔ دفتری اوقات کے بعد عام سائلین کے فوری نوعیت کے کیسز کے لیے 6 مجاز افسران کا تقرر کیا گیا ہے۔ نوٹی فکیشن میں یہ بھی درج ہے کہ قیدی کی جان کو شدید خطرات لاحق ہونے کے پیشِ نظر دفتری اوقات کے علاوہ بھی درخواست وصول کر کے سماعت کی جائے گی،ایسا کوئی بھی کیس جس پر چیف جسٹس مطمئن ہوں کہ فوری نوعیت کا کیس ہے تو وہ بھی چھٹی کے روز سنا جائے گا۔ اسلام آباد ہائی کورٹ کے مجاز افسران میں ڈپٹی رجسٹرار سلطان محمود، اسسٹنٹ رجسٹرار محمد اسد، اسٹنٹ رجسٹرار شیخ روہان شامل ہیں۔ ان کے علاوہ اسسٹنٹ رجسٹرار محمد عرفان، اسسٹنٹ رجسٹرار شاہد ندیم اور ارباب محمد امجد بھی مجاز افسران میں شامل کئے گئے ہیں۔اسلام آباد ہائی کورٹ نے آئی ٹی ڈپارٹمنٹ کو نوٹی فکیشن کی کاپی ہائیکورٹ کی آفیشل ویب سائٹ پر بھی جاری کرنے کی ہدایت کی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں