پشاور: قبائلی علاقوں کے انضمام کا اصل مقصد وہاں کے عوام کو ملک کے دیگر علاقوں کی طرز پر سہولیات فراہم کرنا ہے، وزیر اعظم عمران خاں

پشاور: (صاف بات)قبائلی علاقوں کے انضمام کا اصل مقصد وہاں کے عوام کو ملک کے دیگر علاقوں کی طرز پر سہولیات فراہم کرنا ہے، وزیر اعظم عمران خاں

وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے کہ قبائلی علاقوں کے انضمام کا اصل مقصد وہاں کے عوام کو ملک کے دیگر علاقوں کی طرز پر سہولیات فراہم کرنا ہے، بدقسمتی سے ماضی میں یہاں کے عوام کو نظر انداز کیا گیا، وزیر اعظم نے ہدایت کی کہ قبائلی علاقہ جات میں کاروبار کے مواقع بڑھانے پر توجہ دیں جس کی وجہ سے علاقے میں روزگار کے مواقع پیدا ہوں گے اور علاقے کی سماجی و معاشی ترقی ہوگی۔ ان خیالات کا اظہار وزیر اعظم عمران خان نے ہفتہ کو یہاں پشاور دورے کے موقع پر خیبر پختونخوا کی صوبائی کابینہ کے اراکین سے گفتگو کے دوران کیا جنہوں نے وزیر اعظم عمران خان سے ملاقات کی، گورنر خیبر پختونخواشاہ فرمان، وزیر اعلی محمود خان، چیف سیکرٹری، آئی جی پولیس اورسینئر افسران بھی ملاقات کے دوران موجود تھے۔ وزیر اعظم نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ قبائلی علاقوں کے انضمام کا اصل مقصد وہاں کے عوام کو ملک کے دیگر علاقوں کی طرز پر سہولیات فراہم کرنا ہے،

بدقسمتی سے ماضی میں اس علاقے کی عوام کو نظر انداز کیا گیا۔ انہون نے کہا کہ انضمام کے عمل کو کامیابی سے آگے بڑھاناپاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کی حکومت کی بڑی کامیابی ہے۔ وزیر اعظم عمران خان نے کہا کہ موجودہ حکومت نے انضمام شدہ علاقوں کے لئے ریکارڈ فنڈز مہیا کئے ہیںِ، انضمام شدہ علاقوں میں نوجوانوں کے لئے روزگار کے مواقع فراہم کرنا ہماری اولین ترجیحات میں شامل ہے۔ وزیر اعظم نے ہدایت کی کہ قبائلی علاقہ جات میں کاروبار کے مواقع بڑھانے پر توجہ دیں جس کی وجہ سے علاقے میں روزگار کے مواقع پیدا ہوں گے اور سماجی و معاشی ترقی ہوگی۔ وزیر اعظم نے کہا کہ سعودی عرب نے سیاحت کے شعبے میں سرمایہ کاری میں دلچسپی کا اظہار کیا ہے۔انہوںنے ہدایت کی کہ خیبر پختونخوا حکومت اس پہلو پر خصوصی توجہ دے تاکہ صوبے میں موجود سیاحت کے استعداد کو برئوے کار لایا جا سکے۔ انہوںنے کہا کہ خیبر پختونخوا میں پی ٹی آئی پر عوام نے دوبارہ اعتماد کا اظہار کیا ہے اس لیے اب ہمارے اوپر زیادہ ذمہ داری ہے کہ عوام کی بھر پور خدمت کریں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں