وزیراعظم عمران خاں نے سکھ یاتریوں کیلئےپاسپورٹ شرط ختم کرنیکااعلان کر دیا۔

وزیراعظم نے بابا گرونانک کی 550 ویں سالگرہ پر سکھ یاتریوں کیلئےپاسپورٹ شرط ختم کرنیکااعلان کر دیا۔

 وزیراعظم عمران خان نے سماجی رابطے کی سائٹ ٹوئٹر پر ٹوئیٹ کرتے ہوئے سکھ یاتریوں کو بابا گرونانک کی 550 ویں سالگرہ کے موقع پر بڑی خوش خبری دیتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستان آنے والے سکھ یاتریوں کیلئے دو شرطیں ختم کرنے کا اعلان کرتا ہوں۔ انہوں نے کہا کہ سکھ ياتری پاسپورٹ کے بجائے واضح شناخت پر کرتارپور آسکيں گے، جب کہ سکھ ياتریوں کو پاکستان آنے کیلئے 10 روز قبل رجسٹريشن کرانے کی ضرورت بھی نہیں ہے۔ یاتری رجسٹریشن کی شرط سے مشروط ہونگے۔ واضح رہے کہ اس سے قبل ترجمان دفتر خارجہ نے میڈیا بریفنگ میں اس بات کا اعلان کیا تھا کہ بھارت سے 5 ہزار سے زائد سکھ یاتریوں کو روزانہ کی بنیاد پر پاکستان بھیجنے پر اتفاق کرلیا گیا ہے، نومبر میں پاکستان کی جانب سے راہداری کھول دی جائے گی۔ ڈاکٹر فیصل نے مزید بتایا کہ یاتریوں کیلئے بس پوائنٹس اور اسٹاپس بنائے جائیں گے، صحافیوں کو بھی ان جگہوں کا دورہ کرایا جائے گا۔ ایف آئی اے اور امیگریشن پوائٹنس بھی راہداری کے انٹری اور اخراج کے راستوں پر بنائے جائیں گے۔ یاتری جس روز آئیں گے، انہیں اسی روز واپس جانا ہوگا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں