رہنماء ن لیگ مریم نواز کی ضمانت پر فیصلہ آج سنایا جائیگا

چوہدری شوگر مل کيس ميں مريم نواز کی ضمانت کی درخواست پر وکلاء کے دلائل مکمل ہونے کے بعد عدالت محفوظ کيا گيا فيصلہ آج سنائے گی۔

جسٹس علی باقر نجفی کی سربراہی ميں 2 رکنی بينچ نے کيس کی سماعت کی۔ نيب کے وکيل جہانزيب بھروانہ نے درخواست کو ناقابل سماعت قرار ديتے ہوئے دلائل ديئے کہ مریم نواز کی ضمانت کے ليے جو وجوہات ہونی چاہیں۔ وہ اس کیس میں نہیں۔ نیب حکام کی جانب سے مریم نواز شریف کو ضمانت دینے کی مخالفت کی گئی تھی۔ اپنے دلائل میں نیب حکام کا کہنا تھا کہ ناصر لوتھا دبئی میں ریئل اسٹیٹ کا کاروبار کرتا ہے، گواہ نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ 48 لاکھ 85 ہزار 14 امریکی ڈالر یوسف عباس کو بھجوائے۔ انہوں نے عدالت کو مزید بتایا کہ عبداللّٰہ ناصر لوتھا کا بیان 3 اگست کو اسلام آباد میں ریکارڈ کیا تھا، یہ شخص اومنی گروپ کیس میں بھی وعدہ معاف گواہ ہے، جب کہ مریم نواز شریف کے وکیل امجد پرویز کا کہنا تھا کہ ایک عرصے سے مریم نواز کے پاس مل کے کوئی شیئرز نہیں، 1991ء میں جب چوہدری شوگر ملز قائم ہوئی تو اس وقت مریم نواز چھوٹی تھیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں