مولانا کے ہوتے یہودیوں کوسازش کرنے کی کوئی ضرورت ہے کیا ۔ عمران

وزیر اعظم عمران خان نے جلسہ کے دوران کہا کہ مولانا فضل الرحمان کے ہوتے یہودیوں کو پاکستان کے خلاف سازش کرنے کی کوئی ضرورت نہیں۔

گلگت بلتستان میں جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ جس طرح بھارتی میڈیا بھر پور کوریج دے رہا ہے اس سے ایسا لگتا ہے کہ مولانا انڈین شہری ہیں۔ انہوں نے کہا کہ آزادی مارچ کے نام سے جو گلدستہ اکٹھا ہوا ہے وہ حیران کن ہے کیوں کہ اس میں ازل سے مولانا فضل الرحمان کی مخالفت کرنے والے اچکزئی اور خود کو لبرل کہلانے والے بلاول بھی جمع ہوگئے۔ انہوں نے کہا کہ بیروزگاروں کا ٹولہ ہے جو اسلام آباد میں اکٹھا ہوا ہے۔ وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ دنيا اِدھر کی اُدھر ہوجائے،عمران خان انہيں نہيں چھوڑے گا اور جيلوں ميں ڈالے گا، کسی کو اين آر او نہيں ملے گا۔ وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ فضل الرحمان کے ہوتے ہوئے يہوديوں کو سازش کرنے کی ضرورت نہيں،بھارتی ميڈيا فضل الرحمان کو دکھا دکھا کر خوش ہو رہا ہے،ايسا لگ رہا ہے کہ فضل الرحمان بھارتی شہری ہے۔ عمران خان نے کہا کہ ڈیزل کے پرمٹ پر فضل الرحمان کا اسلام بک جاتا ہے، يہ لوگ جانتے ہيں کہ دنيا ادھر کی ادھر ہوجائےعمران خان انہيں نہيں چھوڑے گا، انہيں جيلوں ميں ڈالے گا، کسی کو اين آر او نہيں ملے گا۔ وزيراعظم نے کہا کہ ايک آزادی کا جشن يہاں منايا جارہا ہے، ايک آزادی مارچ اسلام آباد ميں ہورہا ہے، وہاں شريک افراد کو معلوم ہی نہيں کہ وہ کيوں اکھٹا ہوئے ہيں،نہ ن ليگ کو پتہ ہے نہ پيپلز پارٹی کو،خود کو لبرل کہنے والے بلاول کرپٹ ہيں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں