کراچی:تحریک انصاف کے رہنماء حلیم عادل شیخ کیخلاف اغوا کا مقدمہ درج

 عمرکوٹ میں پولیس نے تحریک انصاف کے رہنما حلیم عادل شیخ کے خلاف اغوا کا مقدمہ درج کرلیا ہے۔

پولیس اسٹیشن کنری میں خالد جٹ نامی شخص کی مدعیت میں درج مقدمہ میں رکن سندھ اسمبلی حلیم عادل شیخ اور ان کے 4 ساتھیوں کو نامزد کیا گیا اور مقدمہ میں انسداد دہشت گردی ایکٹ کی دفعات بھی شامل کی گئی ہیں۔ مدعی نے ایف آئی آر درج کرواتے ہوئے پولیس کو بتایا کہ حلیم عادل شیخ سمیت چار افراد نے متاثرہ شخص کو اغوا کرکے گاڑی میں ڈالا اور تشدد کا نشانہ بنایا۔ بعد ازاں زبردستی ویڈیو بیان لیکر چھوڑ دیا گیا۔ پولیس کا کہنا ہے کہ گزشتہ روز حلیم عادل شیخ سانحہ تیز گام میں جاں بحق افراد کے ورثاء سے تعزیت کے لیے کنری آئے تھے۔ اس موقع پر کچھ مشتعل افراد نے ان کی گاڑی کا پیچھا کیا اور ان کے خلاف نعرے لگائے۔ دوسری جانب حلیم عادل شیخ نے الزام عائد کیا تھا کہ پیپلز پارٹی کے رہنما تیمور ٹالپر کے قافلے کے لوگوں نے ہم پر حملہ کیا اور حملے کے وقت تیمور ٹالپر کے ساتھ ایس ایس پی عمر کوٹ بھی ہمراہ تھے۔ حلیم عادل شیخ کے میڈیا کوارڈینیٹر نے اس وقت کہا تھا کہ حملہ کرنے والے شخص کو پکڑ لیا گیا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں