قصور:سپیشل برانچ کے ہیڈا کانسٹیبل کو بچانے کیلئے پولیس متحرک شہری انصاف کا منتظر

قصور:(صاف بات) سپیشل برانچ کے ہیڈ کانسٹیبل محمد سجاد پیٹی بھائی کو بچانے کیلئے تھانہ اے ڈویژن پولیس متحرک ریڑھا گھوڑا برآمد ہونے کے باوجود قانونی کارروائی کرنے سے گریزاں درخواست گزار کا ڈی پی اوسے انصاف کا مطالبہ تفصیلات کیمطابق سپیشل برانچ کا ہیڈکانسٹیبل جو کہ تھانہ بی ڈویژن میں تعینات ہے۔ گزشتہ روز محمد شفیق نامی شریف شہری نے تھانہ اے ڈویژن میں ہیڈ کانسٹیبل محمد سجاد اور اسکے دیگر ساتھیوں کیخلاف قانونی کارروائی کیلئے درخواست دے رکھی ہے۔ جن سے ڈی ایس پی سٹی کے احکامات پر ایس ایچ او تھانہ اے ڈویژن اور تفتیشی آفیسر، چوکی لاری اڈا کے چوکی انچارج نے ریڑھا گھوڑا تو بر آمد کروالیا مگر پیٹی بھائی ہونے کے ناطے نہ تو سپیشل برانچ کے ہیڈ کانسٹیبل اور نہ ہی اسکے دیگر ساتھیوں کیخلاف تاحال کسی قسم کی کوئی قانونی کارروائی عمل میں نہ لائی جا سکی ہے۔

یاد رہے سپیشل برانچ قصور میں تعینات ہیڈ کانسٹیبل محمد سجاد پولیس کی وردی میں منشیات فروشی،شراب فروشی،جسم فروشی،جعلی کرنسی جیسے گھناؤنے کاروبار کیساتھ ساتھ ریٹائرڈ پولیس افسران کی پشت پناہی کی بناء پر کارندوں کے ذریعے غریب افراد کی ملکیتی زمینوں پر قبضہ کروا کر اسے سستے داموں پر خرید کر آگے فروخت کرنے جیسے جرائم میں ملوث ہے جس کی اگر محکمانہ طور پر تفتیش کی جائے تو اسکا تمام ڈیٹا پولیس افسران کے سامنے آجائے گا۔ایسے کرپٹ ترین ہیڈ کانسٹیبل کیخلاف محکمانہ کارروائی اور قانونی کارروائی کرنے کیلئے درخواست گزارشریف شہری محمد شفیق نے ڈی پی او قصور سمیت دیگر اعلیٰ افسران سے انصاف کی اپیل کی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں