ہم امریکہ اور یورپ کیساتھ بھی تعلقات استوار کرنے کیلئے تیار ہیں مگر انکے غلام نہیں بنیں گے. مولانا فضل الرحمن

سیرت النبی کانفرنس سے مولانا فضل الرحمان نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہم امریکا اور یورپ سے بھی دوستانہ تعلقات استوار کرنے کیلئے تیار ہیں، لیکن کسی کے غلام نہیں بنیں گے، ربر اسٹامپ حکومت قبول نہیں کرتے، پاکستان نے کرتار پور راہداری کھولی جواب میں بھارت نے بابری مسجد کا فیصلہ مسلمانوں کیخلاف دیا۔

جمعیت علمائے اسلام (ف) کا آزادی مارچ 14واں دن ہے، مولانا فضل الرحمان نے آج (ہفتہ کو) سیرت النبی ﷺ کانفرنس کے انعقاد کا اعلان کیا تھا۔

جے یو آئی (ف) سربراہ نے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ سیرت النبی ﷺ کانفرنس سے دنیا کو پیغام دے رہے ہیں، پاکستان جس مقاصد کیلئے بنا وہ حاصل نہ کرسکے، بطور قوم آج ہم کس کی پیروی کررہے ہیں؟۔

ان کا کہنا تھا کہ پاکستان کی جانب سے آج کرتار پور راہداری کا افتتاح کیا گیا، جواب میں بھارت نے بابری مسجد کا فیصلہ مسلمانوں کیخلاف دیا، جعلی اور انگوٹھا چھاپ اسمبلیاں قبول نہیں کریں گے، ربر اسٹامپ حکومت کسی صورت قبول نہیں، یہ ملک ہمارا ہے کسی کی جاگیر نہیں۔

جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ نے مزید کہا کہ ہم نے ایک آواز بن کر ملک کے مستقبل کو روشن بنانا ہے، ہم امریکا اور یورپ سے بھی دوستانہ تعلقات استوار کرنے کیلئے تیار ہیں، لیکن کسی کے غلام نہیں بنیں گے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں