اسلام آباد:قومی اسمبلی میں جو کل ہوا آئین کو توڑا گیا جمہوری عمل کو سبوتاژ کیا گیا،بلاول بھٹو

اسلام آباد:(صاف بات) چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری کا کہنا تھاکہ قومی اسمبلی میں جو کل ہوا آئین کو توڑا گیا جمہوری عمل کو سبوتاژ کیا گیا، اپوزیشن کے پاس ایک ہی آئینی طریقہ ہے جس کے ذریعہ وزیر اعظم کو ہٹایا جا سکتا ہے، اور ہم نے وہی کیا، لیکن وزیر اعظم نے آئین توڑ کر اسے سبوتاژ کرنے کی کوشش کی ہے، ہم سب جمہوریت پسند لوگ ہیں، 1973 آئین کی بنیاد ہم سیاسی جماعتوں نے رکھی، پاکستان کے آئین کا دفاع کرنا ہر ایک پاکستانی کی ذمہ داری ہے، ہم کبھی نہیں چاہیں گے کہ کوئی غیر آئینی کام کیا جائے۔

چیئرمین پی پی پی نے کہا کہ ہمارے کچھ کارکنان کنفیوژ ہیں اور کچھ کارکن جشن منا رہے ہیں کہ سلیکٹڈ کی حکومت کو گھر بھجوادیا، وزیراعظم کو پتہ نہیں ان کے ساتھ ہوا کیا ہے، ہم سب کے دباؤ کی وجہ سے 3 ماہ اس حکومت کا جینا حرام ہوگیا تھا، عمران نیازی نے اس دباؤ میں خود کشی کرلی، وزیر اعظم اپنی انا کے نتیجہ پر اسی نتیجہ پر آسکتے تھے، وہ خود اگر استعفیٰ دیتے تو وہ آئینی ہوتا، ووٹنگ ہوتی تو وہ جمہوری عمل ہوتا، ہوا یہ کہ صدر پاکستان اور اسپیکر و ڈپٹی اسپیکر نے آئین توڑ کر عمران خان کی انا کو سنبھالا دیا، عدالت فیصلہ کرے آئین ضروری ہے یا عمران خان کی انا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں