اسلام آباد:وزیراعظم نے دوست ملک سے ملنے والے تحائف خود نہ رکھنے کا اعلان کردیا-

اسلام آباد:(صاف بات) شہباز شریف کی جانب سے غیر ملکی تحائف وزیراعظم ہاؤس میں ہی مستقل طور پر رکھنے کی ہدایت کی گئی ہے۔ وزیراعظم کا کہنا ہے کہ قیمتی تحائف وزیراعظم ہاؤس میں ہی رکھنےکی پالیسی بنائی جائے۔شہباز شریف کا یہ بھی کہنا تھا کہ قیمتی تحائف عوام کو دکھانے کا اہتمام بھی کیا جائے۔ ایسا کرنے سے عوام دوست ممالک کی پاکستان سے محبت سے آگاہ ہوسکیں گے۔وزیراعظم شہباز شریف کی ہدایت پر وزیراعظم ہاؤس میں تحائف کیلئے جگہ بھی مختص کردی گئی ہے، جب کہ وزیراعظم نے کابینہ ڈویژن کو آئندہ بھی کوئی تحفہ خود نہ رکھنے سے آگاہ کردیا ہے۔دوسری جانب وزیراعظم نے بیرون ممالک سے ملنے والےتحائف سرکاری خزانے میں جمع کرادیئے۔

توشہ خانے میں جمع کرائے گئے تحائف کی مالیت 27 کروڑ روپے ہے۔ وزیراعظم کو یہ قیمتی تحائف خلیجی ممالک کے دوروں کےدوران ملے تھے۔وزیراعظم شہباز شریف کو ملنے والےتحائف میں ہیرے جڑی 2 قیمتی گھڑیاں بھی شامل ہیں۔ ایک گھڑی کی مالیت 10 کروڑ اور دوسری کی قیمت 17 کروڑ بتائی گئی ہے۔اطلاعات کے مطابق خلیجی ریاستوں کی جانب سے وزیراعظم شہباز شریف کو عمران خان سے زیادہ مہنگی گھڑیاں دی گئیں۔ وزیراعظم نے قیمتی قلم، انگوٹھی، کف لنکس اور خوشبو کے تمام تحائف توشہ خانے میں جمع کرا دئیے۔شہباز شریف وزیراعلیٰ پنجاب کے طور پر دس سال کے دوران ملنے والے تمام غیرملکی تحائف توشہ خانے میں جمع کرواتے رہے ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں