مظفرآباد:سردار عبدالقیوم نیازی وزیرِ اعظم آزاد کشمیر منتخب

مظفر آباد:(صاف بات) تحریکِ انصاف کے امیدوار سردار عبدالقیوم نیازی آزاد کشمیر کے 13 ویں وزیرِ اعظم منتخب ہو گئے۔سردار عبدالقیوم نیازی کو 33 ووٹ ملے ہیں، ان کے مقابل متحدہ اپوزیشن کے نامزد امیدوار چوہدری لطیف اکبر نے 15 ووٹ لیئے۔اس سے قبل نو منتخب اسپیکر چوہدری انوار الحق کی صدارت میں آزاد کشمیر قانون ساز اسمبلی کا اجلاس ہوا جس میں وزیرِ اعظم آزاد کشمیر کے انتخاب کا مرحلہ مکمل ہوا اور ان کے نام کا اعلان کیا گیا۔طے کیئے گئے طریقۂ کار کے مطابق آزاد کشمیر قانون ساز اسمبلی میں ووٹنگ ہوئی، ووٹنگ مکمل ہونے کے بعد تمام اراکین ایوان سے باہر چلے گئے، پھر ووٹوں کی گنتی شروع ہوئی، گنتی مکمل ہونے پر گھنٹیاں بجائی گئیں۔

پاکستان تحریکِ انصاف، پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ نون کے اراکین ایوان میں موجود تھے جنہوں نے وزیرِ اعظم آزاد کشمیر کے لیے ووٹنگ میں حصہ لیا۔اسمبلی کے سیکریٹری کے مطابق دونوں امیدواروں کے لیے الگ الگ پریزائیڈنگ آفیسر مقرر کیئے گئے تھے، عبدالقیوم نیازی کے لیے 3 جبکہ چوہدری لطیف اکبر کے لیے 4 کاغذاتِ نامزدگی موصول ہوئے تھے جنہیں درست قرار دیا گیا۔پاکستان تحریکِ انصاف (پی ٹی آئی) نے سردار عبدالقیوم نیازی کو وزیرِ اعظم آزاد کشمیر کے منصب کے لیے نامزد کیا تھا جبکہ پاکستان پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ نون نے مشترکہ طور پر چوہدری اکبر کو آزاد کشمیر کے وزیرِ اعظم کے لیے امیدوار نامزد کیا تھا۔ووٹنگ کے طریقۂ کار پر مسلم لیگ نون اور پیپلز پارٹی کے مشترکہ امیدوار چوہدری لطیف اکبر نے اعتراض کرتے ہوئے کہا تھا کہ ووٹنگ خفیہ ہونی چاہیئے، قاعدہ چہارم کو معطل کیا جائے اور خفیہ رائے شماری کی جائے۔

مسلم کانفرنس کی جانب سے پی ٹی آئی کے نامزد وزیرِ اعظم عبدالقیوم نیازی کی حمایت کا اعلان کیا گیا تھا، مسلم کانفرنس کی آزاد کشمیر اسمبلی میں صرف 1 نشست ہے۔پاکستان تحریکِ انصاف 32 اراکین کے ساتھ ایوان میں سرِ فہرست ہے، وزیرِ اعظم کے انتخاب کیلئے 27 ارکان پر مشتمل سادہ اکثریت سے انتخاب عمل میں لایا گیا۔آزاد کشمیر کے وزیرِ اعظم کا انتخاب آئین کے آرٹیکل 13 کے تحت عمل میں لایا گیا۔آزاد کشمیر کے نو منتخب وزیرِ اعظم اور سابق وزیرِ اعظم ایوان سے خطاب کریں گے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں